22

نیوزی لینڈ کا کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں فتح کا اعلان

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن نے کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں فتح کا اعلان کیا ہے۔نیوزی لینڈ میں آج سے ملک میں جاری لاک ڈاؤن مرحلہ وار ختم کرنے کا آغاز کردیا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق جسنڈا آرڈرن کا کہنا ہے کہ نیوزی لینڈ نے کورونا کے خلاف جنگ جیت لی ہے۔اس وقت بڑے پیمانے پر نامعلوم کمیونٹی ٹرانسمیشن کے کیسز نہیں ہیں۔
انہوں نے کہا کہ پانچ ہفتے سخت لاک ڈاؤن میں رہنے کے بعد نیوزی لینڈ پیر سے لیول 3 کے لاک ڈاؤن کی طرف جارہا ہے۔لیول 3 پر لاک ڈاؤن کے دوران چند کاروبار، ٹیک اوے والے ریسٹورنٹ اور سکولوں کو کھولنے کی اجازت دی جائے گی۔وزیراعظم جسینڈا آرڈرن نے نے متنبہ کیا ہے کہ کورونا کیس کب ختم ہوں گے اس حوالے سے کچھ یقین سے نہیں کہا جا سکتا۔
ہر کوئی سماجی رابطوں کو بحال کرنا چاہتا ہے تاہم ہم اس وقت اسے مس کریں گے۔

سماجی رابطوں کو اعتماد کے ساتھ بحال کرنے کے لیے ہمیں آہستہ اور احتیاط کے ساتھ اس طرف بڑھنا ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ میں نہیں چاہوں گی کہ جو کچھ نیوزی لینڈ کے شہریوں کی صحت کے حوالے سے ہم نے حاصل کیا ہے اس کو دوبارہ کھو دیں۔نیوزی لینڈ میں لاک ڈاؤن میں نرمی اس وقت کی گئی جب پچاس لاکھ آبادی والے ملک میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران صرف ایک کیس سامنے آیا جس کے بعد نیوزی لینڈ میں کورونا سے اب تک متاثر ہونے والوں کی تعداد 1122 ہوگئی ہے۔
جب کہ 19 افراد مہلک وائرس سے ہلاک ہوئے۔خیال رہے کہ ) نیوزی لینڈ میں کورونا وائرس کے وبائی مرض سے نمٹنے کے لیے کچھ روز قبل ملک بھر میں سخت اقدامات کئے گئے جن کے تحت دفاتر ، سکول اور تمام غیر ضروری خدمات بشمول بارز ، ریستوراں ، کیفے اور کھیل کے میدان سب کچھ لاک ڈاؤن کے باعث بند کردئیے گئے تھے تاہم اب صورت حال بہتر ہونے پر اگلے ہفتے سے لاک ڈاؤن کے سخت اقدامات میں نرمی کی جارہی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں